رسولوں کے عقیدہ پر غورو خوض

 

(مسیحت کے بنیادی اصول)

 

خدا باپ

رسولوں کے ایمان کے اقرار تین ہیں ۔پہلا اقرار وہ کرتے ہیں کہ وہ خدا قادر مطلق باپ پر ایمان رکھتے ہیں جس نے آسمان اور زمین کو پیدا کیا (پیدائش ۱:۱) دوسرا وہ اقرار کرتے ہیں کہ یسوع مسیح خدا کا بیٹا ہے جس نے ہمیں گناہوں سے معافی دی اور تیسرا اقرار ہے کہ وہ ایمان رکھتے ہیں کہ یسوع مسیح روح القدس سے معمور تھا ۔ اور ہمیں بھی یہ اقرار کرنا چاہیے کہ ہم ایمان رکھتے ہیں کہ خدا باپ ، بیٹے اور روح القدس پر ہمیں ویسا ہی ایمان رکھنا چاہیے جیسا رسولوں کا تھا ۔ ہمارے لئے خدا باپ ہے اُسی طرح سے جیسے بیٹا اور روح القدس خدا ہے ۔ جہاں تک باپ ، بیٹا اور روح القدس کی حقیقت کا تعلق ہے ۔ تو یہ سب ایک خدا ہیں ۔ جیسے ایمان ہم سب میں ایک ہے ۔ علاوہ ازیں چونکہ باپ قادر مطلق خدا ہے اور بیٹا بھی قادر مطلق خدا یہ تین شخصیت پاک تثلیث ہیں دوسرے لفظوں میں یہ سب ایک واحد خدا ہیں ۔ اِس ہی طرح اِس کے مطابق ایمان لانا چاہیے کہ تین شخصیت باپ ، بیٹا اور روح القدس یہ سب بنیادی طور پر ایک واحد ہیں ۔ اِس طرح سے ہمیں اپنے ایمان کی بنیادیوں کو خدا کے کلام کے مطابق قائم کرنی چاہیے ۔ ہمیں کلام حق کی آوا زکو سننا چاہیے ۔

کتاب مقدس کے ثبوت:۔

۔(الف) پرانے عہد نامے سے ۔
۱۔ سب سے پہلے ، پرانے عہد نامہ میں ظاہر ہو جات اہے کہ خدا ایک ہے ۔ ”سن اے اسرائیل ! خدا وند ہمارا خدا ایک ہی خداوند ہے “

۲۔ اُسی لمحہ پرانے عہد نامہ بغیر کسی غلطی کے یہ بھی ظاہر کرتا ہے کہ خدا بے شمار ذات ہیں وجود رکھتا ہے ۔ ”پھر خدا نے کہا کہ ہم انسان کو اپنی صورت یہ اپنی شبیہ کی مانند بنائیں ۔۔۔۔“(پیدائش :۱:۶:۲)

”سو آو ہم وہاں جا کر اُنکی زبان میں اختلاف ڈالیں تاکہ وہ ایک دوسرے کی بات سمجھ نہ سکیں ۔“ (پیدائش ۱۱:۷)

اِن حوالہ جات سے ہم دیکھ سکتے اور ایمان لاتے ہیں کہ خدا ایک شخصیت میں نہیں بلکہ ایک سے زاہد شخصیات میں وجود رکھتا ہے ۔

(ب) پرانے عہد نامہ میں :
باپ ، بیٹا اور روح القدس ہمارے خدا ہیں لیکن خدا تین انفرادی شخصیات میں بھی وجود رکھتا ہے ۔ یہ سچائی بالکل اِسی طرح سے نئے عہد نامہ میں بھی ظاہر کی گئی ہے ۔

۱۔ باپ ، بیٹا اور روح القدس تین الگ الگ شخصیات میں واضح طور پر یسوع کے بتپسمہ کے وقت ظاہر ہوتے ہیں جب اُس نے اپنی عوامی خدمت کا آغاز کیا تھا ۔” اور یسوع بتسمہ لے کر فی الفور پانی کے پاس اُوپر گیا اور دیکھو اُسکے لئے آسمان کھل گیا اور اُس نے خدا کے روح کو کبوتر کی مانند اُترتے اور اپنے اُوپر آتے دیکھا۔ اور دیکھو آسمان سے یہ آواز آئی ۔ کہ یہ میرا پیارا بیٹا ہے جس سے میں خوش ہوں ۔ (متی ۳:۲۱۔۷۱).

یہ حوالہ یوحنا اصطباغی کے بتپسمہ کے وسیلے یسوع کے بتپسمہ کو ظاہر کرتا ہے جب خدا تثلیث ظاہر ہو جاتا ہے ۔ اِس حوالہ سے ہمیں پتہ چلتا ہے کہ یسوع خدا کا بیٹا ہے اور روح القدس اُسکے ساتھ مل کر کام کرتا ہے ۔ اور باپ اِس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ ”یہ میرا پیارا بیٹا ہے جس سے میں خوش ہوں “ اِن باتوں کو ظاہر ہو جانے سے خدا تثلیث واضح ہو جاتا ہے ۔ یسوع ہی خدا کی راستبازی کو پورا کر سکتا تھا کیونکہ اُس نے یوحنا کے بتپسمہ لینے سے نسل انسانی کے تمام گناہوں کو اپنے اُوپر اُٹھا لیا ۔ اِس ہی وجہ سے اُسے ہمارے لئے صلیھ پر جان دینی پڑی اور یہ ”خدا کی راستبازی “ ہے جو باپ نے اپنے بیٹے کے وسیلے پوری کی تھی ۔ کہ یسوع اُس بتپسمہ کے راست عمل کے ساتھ خدا کی راستبازی کو پورا کر کے ہمارے تمام گناہوں کو اُٹھا لے گیا اور اِس سچائی کی تصدیق باپ اور روح القدس کے وسیلے سے ہوتی ہے ۔ اِس طرح باپ ، بیٹا اور روح القدس تینوں الگ شخصیات ہیں لیکن وہ ہمارے لئے ایک خدا ہیں ۔
متی ۸۲:۹۱ بھی باپ ، بیٹا اور روح القدس کو ایک خدا کے طور پر ظاہر کرتا ہے ۔ جیسا کہ یسوع نے اپنے شاگر دوں کو حکم دیا ، ”جاﺅ ساری قوموں کو شاگرد بناﺅ اُنہیں باپ ، بیٹے اور روح القدس کے نام سے بتپسمہ دو۔“ یہ وہ تین شخصیات ہیں جو خدا تثلیث میں باپ ، بیٹا اور روح القدس ہے جو الگ شخصیات ہیں لیکن اُسی لمہ وہ ایسے ایک ہیں کہ واحد خدا ہو ۔ اُسی طرح جب ہم خدا پر ایمان لاتے ہیں تو ہم ایک خدا پر ایمان لاتے ہیں جس مین تین شخصیات آپس میں منسلک ہیں ۔